مفتی اعظم کل 35ویں مرتبہ حج کا خطبہ دیں گے

pic_1442922427

مکہ مکرمہ (22 ستمبر۔2015ء)سعودی عرب کے 74سالہ مفتی اعظم الشیخ عبد العزیز بن عبد اللہ آل الشیخ کل بدھ کو مسلسل 35ویں مرتبہ حج کا خطبہ دیں گے- انہوں نے پہلی مرتبہ 1981ء ( 1402ہجری) میں حج کا خطبہ دیا اور یہ سلسلہ کل35ویں سال تک جاری ہے-

وہ 1941ء میں سعودی دارالحکومت ریاض میں پیدا ہو ئے – انہوں نے12سال کی عمر میں قرآن پاک حفظ کیا اور 22 سال کی عمرمیں امام الدعوہ انسٹیٹیوٹ سے شرعیہ میں گریجوایشن کی – انہیں1995ء میں سعودی عرب کا نائب مفتی اعظم جبکہ 1999میں مفتی اعظم مقرر کیا گیا – وہ پیدائشی طور پر ہی کم نظری کا شکار تھے اور 1960ء میں بینائی سے مکمل طور پر محروم ہوگئے – مفتی اعظم کی دلچسپی اور ترجیحات میں اسلامی دنیا کے بحران ‘ مسائل کی آگاہی اور زندگی کے تمام شعبوں میں سے متعلقہ ایسے امور کی نشاندہی کرنا ہے جن کی اصلاح کی ضرورت ہے – مفتی اعظم اپنے خطبے میں مسئلہ فلسطین پر خصوصی توجہ دیتے ہیں – اس کا اثر خطبہ کے دوران ان کے لہجے اور چہرے پر واضح طور پر نظر آتا ہے – اس کے علاوہ شیخ اپنے خطبے میں مسلمانوں کی یک جہتی ‘ باہمی اختلافات کے خاتمے اور میڈیا کے مثبت کردار کے ساتھ ساتھ خواتین کی آزادی کے نعرے کی حقیقت بھی بیان کرتے ہیں-

Watch Live Hajj Streaming